Digital Forensic, Research and Analytics Center

بدھ, نومبر 30, 2022
spot_imgspot_imgspot_imgspot_img

Popular Posts

Latest

فیکٹ چیک: کیا کشمیر میں تین لاکھ کشمیری ہندوؤں کا قتل عام؟ اشوک پنڈت نے کیا فیک دعویٰ

گوا میں جاری انٹرنیشنل فلم فیسٹیول آف انڈیا (IFFI)...

فیکٹ چیک: ڈونلڈ ٹرمپ کے پوسٹ کا فیک اسکرین شاٹ وائرل

ڈونلڈ ٹرمپ کے پوسٹ کا ایک اسکرین شاٹ سوشل...

آن لائن اسکین الرٹ: قطر نہیں دے رہا 50GB فری ڈیٹا- پڑھیں فیکٹ چیک

سوشل میڈیا پر ایک پوسٹ شیئر کرکے دعویٰ کیا...

فیکٹ چیک: ’36 ٹکڑےکرنے‘ کا بیان دینے والا راشد خان نہیں، وکاس کمار ہے

شردھا واکر کو اس کے پارٹنر آفتاب پونہ والا...

بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ کا بیان: گاندھی جی نے کروایا تھا سبھاش چندر بوس کا قتل، جانیں، کیا ہے فیکٹ؟

راجستھان کےضلع جھنجھنو سے بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ نریندر کمار کھیچڑ کا ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہو رہا ہے۔ اس ویڈیو میں کھیچڑ نے دعویٰ کیاہے کہ ’آزاد ہند فوج ‘کے بانی سبھاش چندر بوس (Subhas Chandra Bose) کا قتل  گاندھی (Gandhi) جی  نے کروایا تھا۔

اس ویڈیو کو شیئر کرتے ہوئے صحافی آلوک پُتُل لکھتے ہیں ،’بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ نریندر کمار کھیچڑ کا کہنا ہے کہ سبھاش چندر بوس (Subhas Chandra Bose) کا قتل مہاتما گاندھی (Mahatma Gandhi) نے کروایا تھا!‘

وہیں کئی دیگر یوزرس نے بھی اس ویڈیو کو شیئر کیا ہے۔ یوزرس اپنے پوسٹ میں بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ نریندر کمار کھیچڑ کو  شدید ہدف تنقید بنا رہے ہیں۔

پرمیندر سنگھ بھانبا نامی یوزر نے لکھا ،’بی جے پی کے رہنما ،مہاتما  گاندھی (Mahatma Gandhi) کے حوالے سے مسلسل متنازعہ بیانات دے رہے ہیں۔ اگر پی ایم مودی ایسے عناصر کے خلاف بروقت کارروائی کرتے تو ان کی ہمت نہ ہوتی۔ مہاتما گاندھی (Mahatma Gandhi) کی توہین کرنے والوں کو ملک کبھی معاف نہیں کرے گا‘۔

 

فیکٹ چیک:

بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ  کے دعوے کی جانچ-پڑتال کے لیے، ہم نے’نیتا جی‘ کے نام سے مشہور  سبھاش چندر بوس (Subhas Chandra Bose) کے بارے میں گوگل پر سمپل سرچ کیا ۔ اس دوران ہمیں ان کی موت کے حوالے سے ’آج تک‘ کی ایک رپورٹ ملی۔ اس رپورٹ میں نیتا جی کی موت کی گتھی پر روشنی ڈالی گئی ہے۔ رپورٹ میں لکھا  گیاہے ،’18 اگست 1945 کو تائیپے میں نیتا جی سبھاس چندر بوس (Subhas Chandra Bose) کی موت ، ہوائی جہاز کے حادثے میں ہوگئی تھی۔ لیکن کیا ان کی واقعی موت ہو گئی تھی، یہ گتھی سلجھ نہیں سکی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق  نیتا جی کی موت کی بات اس وقت دوبارہ ابھر کر سامنے آئی تھی، جب پنڈت  جواہر لال نہرو کی بہن وجے لکشمی پنڈت نے میڈیا میں بیان دیاتھا۔ انہوں نے کہا تھا کہ میرے پاس ایسی خبر ہے کہ ہندوستان میں تہلکہ مچ جائے گا۔ شاید آزادی سے بھی بڑی خبر۔ لیکن نہرو نے انھیں کچھ بھی کہنے سے منع کر دیا‘۔

دوسری طرف ، نیتا جی کی موت کے معاملے کی بابت ’امر اُجالا‘ میں بھی اسی طرح کی ایک رپورٹ شائع ہوئی ہے۔

اس دوران ہمیں سبھاش چندر بوس (Subhas Chandra Bose) کے مبینہ قتل میں گاندھی (Gandhi) جی کے ملوث ہونے کے بارے میں کوئی اطلاع نہیں ملی اور نہ ہی اس حوالے سے گوگل یا تاریخ کی کتابوں میں کہیں کوئی ذکر موجود ہے۔

نتیجہ:

DFRAC کے فیکٹ چیک سے ثابت ہوتا ہے کہ بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ کا دعویٰ فیک ہے۔ کیونکہ سبھاش چندر بوس کی موت کا معمہ آج تک حل نہیں ہو سکا۔ متنازعہ بیان پر وضاحت پیش کرتے ہوئے بی جے پی کے رہنما نریندر کمار کھیچڑ نے کہا کہ ان کا مطلب سبھاش چندر بوس (Subhas Chandra Bose) کا سیاسی قتل تھا۔

دعویٰ : گاندھی (Gandhi) جی نے کروایا تھا سبھاش چندر بوس (Subhas Chandra Bose) کا قتل  

دعویٰ کنندگان: بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ،  نریندر کمار کھیچڑ

فیکٹ چیک : فیک

(آپ DFRAC# کو ٹویٹر، فیس بک اور یوٹیوب پر فالو کر سکتے ہیں۔)