Digital Forensic, Research and Analytics Center

پیر, نومبر 28, 2022
spot_imgspot_imgspot_imgspot_img

Popular Posts

Latest

ہندو تنظیموں نے اسکولوں میں دعا کے بجائے ’ہندو بھجن‘ گانے کا مطالبہ؟ پڑھیں، فیکٹ چیک

سوشل میڈیا اکاؤنٹ، مرصد مسلمي الهند (@India__Muslim) مسلسل ہندوستان...

دہلی میں دو مسلمانوں نے ایک ہندو لڑکے کو کیا قتل؟ پڑھیں، فیکٹ چیک 

سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو تیزی سے وائرل ہو...

کیا پاکستان نےکیا بلوچستان کے خلاف اعلان جنگ؟ پڑھیں، فیکٹ چیک 

پاکستان اور بلوچستان کے مابین جنگ کے حوالے سے...

فیکٹ چیک: کیا  حکومتِ ہند 3000 مساجد کو منہدم کرنے کا منصوبہ بنا رہی ہے؟

سوشل میڈیا پر ایک دعویٰ وائرل ہو رہا ہے...

فیکٹ چیک: غلام علی کھٹانہ نہیں ہیں جموں و کشمیر سے راجیہ سبھا پہنچنے والے پہلے گجر مسلمان

حال ہی میں جموں و کشمیر کی گجر مسلم کمیونٹی کے رہنما غلام علی نے راجیہ سبھا کے رکن کی حیثیت سے حلف لیا۔ انھیں نائب صدر اور راجیہ سبھا کے چیئرمین جگدیپ دھنکھڑ نے ایوان بالا کے رکن کی حیثیت سے حلف دلایا۔

اس سلسلے میں مرکزی وزیر مملکت جتیندر سنگھ نے ٹویٹ کرکے دعویٰ کیا کہ وہ جموں و کشمیر سے راجیہ سبھا پہنچنے والے گجر مسلم کمیونٹی کے پہلے مسلمان ہیں۔ انہوں نے اپنے ٹویٹ میں لکھا – جموں و کشمیر سے راجیہ سبھا میں داخل ہونے والے پہلے گجر مسلمان غلام علی کھٹانہ نے راجیہ سبھا کی رکنیت کا حلف لیا۔ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں جمہوریت کی جیت۔

Source: Twitter

فیکٹ چیک:

متذکرہ بالا دعوے کا فیکٹ چیک کرنے کے لیے، ہم نے گوگل پر کچھ عام کی-ورڈ کی مدد سے سرچ کیا۔ اس دوران ہمیں ایک وکی پیڈیا پیج ملا جس میں دی گئی معلومات کے مطابق جموں و کشمیر سے پہلی بار گجر مسلم کمیونٹی سے راجیہ سبھا کے لیے نامزد ہونے والے چوہدری محمد اسلم لسنوی ہیں۔ 

Source: Wikipedia

علاوہ ازیں ہمیں kashmirlife.net اور  Scoop News پر اس بارے میں مزید معلومات ہاتھ لگی، جن سے اس دعوے کی تصدیق ہوتی ہے۔

نتیجہ:

DFRAC کے اس فیکٹ چیک سے واضح ہے کہ مرکزی جتیندر سنگھ کا  غلام علی کھٹانہ کے بارے میں یہ دعویٰ کہ وہ جموں و کشمیر سے پہلے گجر مسلم راجیہ سبھا رکن ہیں، فیک ہے۔