Digital Forensic, Research and Analytics Center

بدھ, نومبر 30, 2022
spot_imgspot_imgspot_imgspot_img

Popular Posts

Latest

فیکٹ چیک: کیا کشمیر میں تین لاکھ کشمیری ہندوؤں کا قتل عام؟ اشوک پنڈت نے کیا فیک دعویٰ

گوا میں جاری انٹرنیشنل فلم فیسٹیول آف انڈیا (IFFI)...

فیکٹ چیک: ڈونلڈ ٹرمپ کے پوسٹ کا فیک اسکرین شاٹ وائرل

ڈونلڈ ٹرمپ کے پوسٹ کا ایک اسکرین شاٹ سوشل...

آن لائن اسکین الرٹ: قطر نہیں دے رہا 50GB فری ڈیٹا- پڑھیں فیکٹ چیک

سوشل میڈیا پر ایک پوسٹ شیئر کرکے دعویٰ کیا...

فیکٹ چیک: ’36 ٹکڑےکرنے‘ کا بیان دینے والا راشد خان نہیں، وکاس کمار ہے

شردھا واکر کو اس کے پارٹنر آفتاب پونہ والا...

مسلم ممالک میں وقف بورڈ نہیں ہے لیکن بھارت میں ہے! پڑھیں، فیکٹ چیک

انٹرنیٹ پر ایک خبر وائرل ہو رہی ہے۔ آر کے ساہو نامی سوشل میڈیا یوزر نے اے بی پی نیوز کی بریکنگ نیوز کا اسکرین شاٹ شیئر کرتے ہوئے کیپشن لکھا،’56 اسلامی ملکوں میں کہیں وقف بورڈ نہیں ہے، یہ صرف سیکولر ملک ہندوستان میں ہی کیوں ہے؟ اگر سمجھ لوگے تو بھلا ہوگا‘۔ 

Source: Twitter

اسی طرح دیگر کئی یوزرس نے بھی اس دعوے کو شیئر کیا ہے۔

فیکٹ چیک:

دعوت اسلامی کی ویب سائٹ کے مطابق وقف کا مطلب ہے کہ کسی شے کو اپنی ملک (ملکیت) سے خارج کرکے خالص اللہ عَزَّوَجَلَّ کی ملک کردیا جائے اس طرح کہ اس کا نفع بندگانِ خدا میں سے جس کو چاہے ملتا رہے۔ 

ایک عام کی-ورڈ سرچ کرنے پر DFRAC ٹیم نے پایا کہ کئی مسلم ممالک میں وقف بورڈ موجود ہے۔ انڈونیشیائی وقف بورڈ کی سرکاری سائٹ یہاں دیکھی جا سکتی ہے۔ مصر میں وزارۃ الاوقاف کے نام سے ایک وزارت ہی ہے جو مذہبی نظم و نسق کا کام دیکھتی ہے۔ 

اسی طرح مذہبی امور کی وزارت کے تحت بنگلہ دیش میں وقف منتظم کا دفتر، اوقاف کا انتظام کرتا ہے۔ یہ تینوں مسلم ممالک ہیں۔علاوہ ازیں بہت سے دوسرے مسلم اکثریتی ممالک جیسے اردن اور سعودی عرب میں وقف کا انتظام کرنے کے لیے ادارے موجود ہیں۔

کئی عرب ممالک میں وقف کا نظم و نسق فاؤنڈیشن اور وزارت شرعیہ کے نام کے تحت ہے۔ ترکی اس کی ایک مثال ہے، جہاں وقف املاک کا رکھ رکھاؤ اور انتظام، سلطنت عثمانیہ کے دور سے ہوتا آ رہا ہے۔ 

نتیجہ: 

DFRAC کے اس فیکٹ چیک سے واضح ہے کہ یہ دعویٰ کہ ’56 مسلم ممالک میں کہیں بھی وقف بورڈ نہیں ہے، یہ صرف سیکولر ملک بھارت میں ہی کیوں ہے‘ گمراہ کن ہے۔

دعویٰ: 56 مسلم ممالک میں کہیں بھی وقف بورڈ نہیں ہے، صرف سیکولر ملک بھارت میں ہی کیوں؟

دعویٰ کنندہ: سوشل میڈیا یوزرس

فیکٹ چیک: گمراہ کن