Digital Forensic, Research and Analytics Center

اتوار, فروری 5, 2023
spot_imgspot_imgspot_imgspot_img

Popular Posts

Latest

 فیکٹ چیک: انیش راج S/O پرہلاد راج کو محمد انیش بتا کر میڈیا نے پھلائی فرقہ واریت 

دہلی پولیس کے اے ایس آئی شمبھو دیال کی حال ہی میں افسوسناک موت ہو گئی تھی۔ شمبھو دیال جب ایک خاتون کے موبائل چوری کی شکایت پر ملزم کو گرفتار کرنے پہنچے تو ملزم نے شمبھو دیال پر چاقو سے حملہ کردیا تھا۔ اس حملے کے چند دن بعد ان کی موت ہو گئی۔

وہیں سوشل میڈیا پر دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ شمبھو دیال پر چاقو سے حملہ کرنے والے ملزم کا نام محمد انیش (انیس) ہے۔ کچھ یوزرس، اسے جہادی بتاتے ہوئے شیئر کر رہے ہیں کہ محمد انیش نے چاقو سے حملہ کیا تھا۔ 

سدرشن نیوز کے صحافی ساگر کمار نے لکھا،’جہادی محمد انیش نے جس بہادر پولیس اہلکار پر حملہ کیا تھا، آج ان کی موت ہو گئی۔ جہادی نے کیا تھا چاقو سے گود کر ایک جاں باز ایس آئی کا قتل۔ سلام ایسے بہادر مجاہد کو 🙏  جس نے اپنی جان تک کی پرواہ نہیں کی لیکن بڑا سوال مجرموں کے اتنے حوصلے اتنے بلند کیوں…؟‘

Source: Twitter

اس معاملے پر سدرشن نیوز نے خبر دکھاتے ہوئے دعویٰ کیا تھا کہ اے ایس آئی شمبھو دیال کا قتل کرنے والے کا نام جہادی محمد انیش ہے۔ 

اس کے علاوہ ’ٹائمس ناؤ نوبھارت‘ نے بھی ملزم کو محمد انیش بتایا تھا۔ جسے اس ٹویٹ میں منسلک ویڈیو میں دیکھا جا سکتاہے-’#BreakingNow: دہلی میں ASI شمبھو دیال پر حملے کا #CCTV فوٹیج سامنے آیا، 4 جنوری کو انیس نامی بدمعاش نے کیا تھا چاقوؤں سے حملہ‘۔

Source: Twitter

وہیں ملزم کو محمد انیش بتاتے ہوئے کئی دیگر سوشل میڈیا یوزرس نے بھی پوسٹ شیئر کیا ہے۔ 

Source: Twitter

فیکٹ چیک:

وائرل دعوے کا فیکٹ چیک کرنے کے لیے DFRAC کی ٹیم نے گوگل پر ایک سمپل سرچ کیا۔ ہمیں ’انڈین ایکسپریس‘ کی ایک رپورٹ ملی۔ اس رپورٹ میں ملزم کا نام انیش راج بتایا گیا ہے۔ رپورٹ میں ایک پولیس افسر کے حوالے سے بتایا گیا ہے،’ایک خاتون نے ایک شخص کو پہچانا، جس کے بعد انہوں نے (شمبھو دیال) نے اسے پکڑ لیا، جس کی شناخت مایا پوری کے رہنے والے انیش راج (24) کے طور پر ہوئی ہے۔ جب اے ایس آئی دیال اسے تھانے لا رہے تھے تو انیش نے اے ایس آئی دیال پر اپنی شرٹ چھپا کر رکھے چاقو سے اے ایس آئی دیال پر حملہ کر دیا‘۔ 

Source: indianexpress

وہیں اس تناظر میں، ہمیں دہلی پولیس کا ایک ٹویٹ ملا۔ اس ٹویٹ میں دہلی پولیس نے واضح کیا کہ ملزم کا نام انیش راج ولد پرہلاد راج ہے۔ دہلی پولیس نے ٹویٹ میں لکھا-’اے ایس آئی شمبھو دیال کو قتل کرنے والے ملزم کا نام انیش راج ولد پرہلاد راج ہے۔ یہ ایک مجرم ہے۔موبائل فون چوری کے الزام میں پکڑنے کے دوران اس نے اے ایس آئی پر چاقو سے حملہ کیا تھا۔ معاملہ فرقہ وارانہ نہیں ہے۔ سوشل میڈیا میں کچھ ہینڈلس کی جانب سے غلط اور گمراہ کن معلومات دی جا رہی ہے۔ 

Source: Twitter

نتیجہ:

DFRAC کے زیرِ نظر فیکٹ چیک سے واضح ہے کہ ملزم کا نام محمد انیش نہیں بلکہ انیش راج ولد پرہلاد راج ہے۔ ساتھ ہی دہلی پولیس نے یہ بھی واضح کیا ہے کہ اس معاملے میں کوئی فرقہ وارانہ اینگل نہیں ہے، اس لیے سوشل میڈیا یوزرس کا دعویٰ غلط ہے۔