Digital Forensic, Research and Analytics Center

پیر, نومبر 28, 2022
spot_imgspot_imgspot_imgspot_img

Popular Posts

Latest

ہندو تنظیموں نے اسکولوں میں دعا کے بجائے ’ہندو بھجن‘ گانے کا مطالبہ؟ پڑھیں، فیکٹ چیک

سوشل میڈیا اکاؤنٹ، مرصد مسلمي الهند (@India__Muslim) مسلسل ہندوستان...

دہلی میں دو مسلمانوں نے ایک ہندو لڑکے کو کیا قتل؟ پڑھیں، فیکٹ چیک 

سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو تیزی سے وائرل ہو...

کیا پاکستان نےکیا بلوچستان کے خلاف اعلان جنگ؟ پڑھیں، فیکٹ چیک 

پاکستان اور بلوچستان کے مابین جنگ کے حوالے سے...

فیکٹ چیک: کیا  حکومتِ ہند 3000 مساجد کو منہدم کرنے کا منصوبہ بنا رہی ہے؟

سوشل میڈیا پر ایک دعویٰ وائرل ہو رہا ہے...

بہار کے وزیر تیج پرتاپ یادو کو ملی ڈاکٹریٹ کی ڈگری؟ پڑھیں، فیکٹ چیک

بہار میں وزیراعلیٰ نتیش کمار کے بی جے پی سے اتحاد توڑ کر آر جے ڈی-کانگریس کے ساتھ حکومت بنانے کے بعد سوشل میڈیا ،  بہار اور مہاگٹھ بندھن کے رہنماؤں کے خلاف فرضی اور گمراہ کن خبروں سے بھر گیا ہے۔ سوشل میڈیا یوزرس آئے دن فرضی اور گمراہ کن پوسٹ کرتے رہتے ہیں۔

اسی  سلسلے کی کڑی میں بہار کے جنگلات اور ماحولیات کے وزیر تیج پرتاپ یادو کی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہے۔ اس تصویر میں تیج پرتاپ یادو ایک یونیورسٹی کے کنووکیشن (تقریب تقسیم اسناد) میں گاؤن پوشاک پہنے نظر آ رہے ہیں۔ اس تصویر کو شیئر کرنے والے یوزرس  کا دعویٰ ہے کہ تکشیلا یونیورسٹی-بہار نے  تیج پرتاپ یادو کو ڈاکٹریٹ کی ڈگری عطا کی ہے۔

ایک یوزر نے لکھا،’یہ بتاتے ہوئے انتہائی مسرت ہو رہی ہے کہ لالو یادو کے بیٹے جناب تیج پرتاپ یادو (10 ناکام) نے تکشیلا یونیورسٹی، بہار سے ’ڈاکٹریٹ‘ کی ڈگری حاصل کی ہے۔ یہ تمام ہندوستانیوں کے لیے بڑے فخر کی بات ہے۔ ڈاکٹر تیج پرتاپ یادو کو مبارکباد۔ ایسا اتفاق صرف بھارت میں  ہی ہوتا ہے..‘

فیکٹ چیک:

تیج پرتاپ یادو کی وائرل تصویر کی حقیقت جاننے کی غرض سے ہم نے انٹرنیٹ پر اسے ریورس امیج سرچ کیا ۔ ہمیں یہ تیج پرتاپ یادو کے آفیشل ٹویٹر اکاؤنٹ پر ملی جو تصویر 11 فروری 2017 کو  ٹویٹ کی گئی تھی، جسے کیپشن،’آج IGIMS کے تیسرے کنووکیشن میں شرکت کی اور تمام پاس آؤٹ طلبہ کو ڈگری سرٹیفکیٹ اور گولڈ میڈل دیے گئے‘۔

وہیں، اس تناظر میں مزید تفتیش پر، ہمیں یہ ویڈیو یوٹیوب پر آر جے ڈی بہار کے چینل پر ملا۔ اس ویڈیو کو عنوان ،’ Tej pratap yadav in #igims on the occasion of 3rd convocation 2017 ‘دیا گیا ہے ۔اس ویڈیو میں تیج پرتاپ یادو طلبہ کو گولڈ میڈل اور ڈگری دیتے ہوئے نظر آ رہے ہیں۔

وہیں تکشیلا یونیورسٹی کے بارے میں گوگل پر سرچ کرنے پرمعلوم ہوا کہ یہ پاکستان کے شہر راولپنڈی میں واقع ہے۔ وکی پیڈیا کے مطابق تکشیلا یونیورسٹی موجودہ پاکستان میں راولپنڈی سے 18 میل شمال میں واقع ہے۔

نتیجہ:

ہمارے فیکٹ چیک سے واضح ہے کہ تیج پرتاپ یادو کی وائرل تصویرپانچ سال پرانی ہے۔ تیج پرتاپ یادو کو ڈاکٹریٹ کی ڈگری نہیں دی گئی ہے لیکن تیج پرتاپ یادو IGIMS  کے کنووکیشن میں شرکت کر رہے تھے،لہٰذا سوشل میڈیا یوزرس کا دعویٰ غلط ہے۔

دعویٰ: 10ویں فیل تیج پرتاپ یادو کو  ملی ڈاکٹریٹ کی ڈگری

دعویٰ کنندگان:  سوشل میڈیا یوزرس

فیکٹ چیک : فیک