Digital Forensic, Research and Analytics Center

اتوار, فروری 5, 2023
spot_imgspot_imgspot_imgspot_img

Popular Posts

Latest

فیکٹ چیک: بی جے پی کے رہنماؤں نے کیا بہار میں پولیس کی پٹائی کا پرانا ویڈیو شیئر

سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہو رہا ہے۔ اس ویڈیو کو شیئر کرنے والے یوزرس، دعویٰ کر رہے ہیں کہ یہ ویڈیو بہار کا ہے، جہاں شراب مافیا، پولیس والوں کی پٹائی کر رہا ہے۔ اس ویڈیو کو بی جے پی کے کئی رہنماؤں نے بھی شیئر کیا ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ بہار میں مہا گٹھبندھن حکومت میں شراب مافیا اتنا زیاد بول بالا ہے کہ وہ پولیس والوں کی پٹائی کر رہے ہیں۔

فیس بک پر اس ویڈیو کو شیئر کرتے ہوئے بے بی کماری بی جے پی نے لکھا–’دیکھیے نتیش بابو کی گڈ گورننس کی حقیقت۔ مہاگٹھبندھن کی حکومت میں جرائم پیشہ افراد کا اتنا ہے بول بالا، شراب مافیا کی جانب سے پولیس والوں پر ہی ہو رہا حملہ،#JungleRajReturns بے بی کماری بی جے پی نے فیس بک پر خود کو بہار بی جے پی کا جنرل سکریٹری بتایا ہے۔

Source: Facebook

وہیں اس ویڈیو کو شیئر کرتے ہوئے سُمِت سنگھ بی جے پی نام کے یوزر نے لکھا،’ شراب مافیا نے پولیس والوں کو ہی دھو ڈالا، یہ کیسا بہار مہا گٹھبندھن کی سرکار نے بنا ڈالا؟ #بہار_شراب بندی #JungleRajReturns‘۔ اپنے بایو میں سُمِت سنگھ نے خود بی جے پی اور آر ایس ایس کا کارکن بتایا ہے۔ 

Source: Twitter

فیکٹ چیک:

وائرل ویڈیو کا فیکٹ چیک کرنے کے لیے DFRAC ٹیم نے پہلے ویڈیو کو متعدد کی-فریم میں کنورٹ کیا، اس کے بعد ریورس سرچ کیا۔ ہمیں یہ ویڈیو آر جے ڈی کے ٹویٹر ہینڈل پر اپ لوڈ ملا۔ اس ویڈیو کو 06 ستمبر 2020 کو پوسٹ کیا گیا تھا۔ واضح ہو کہ اس وقت بہار میں بی جے پی اور جے ڈی یو کی اتحادی حکومت تھی، تب آر جے ڈی اپوزیشن میں تھی اور آر جے ڈی نے شراب بندی قانون کی بابت سابقہ بی جے پی-جے ڈی یو حکومت کو ہدف تنقید بنایا تھا۔ 

Source: Twitter

وہیں، اس ویڈیو کو آر جے ڈی کے رہنما اور بہار کے موجودہ کابینی وزیر تیج پرتاپ یادو نے بھی 6 ستمبر 2020 کو شیئر کیا تھا۔ انہوں نے لکھاتھا-’گڈ گورننس، شراب بندی اور مضبوط انتظامی سہولیات کو ایک ساتھ چتھڑے چتھڑے ہوتے اس ویڈیو کو ضرور دیکھیے۔ مکمل شراب بندی میں شراب کی کھیپ پکڑنے گئی ’کُشاسَنی پرہریوں‘ (پولیس) کی شراب مافیاؤں کی جانب سے پٹائی اور گولی باری کی جاتی ہے، پھر بھی گڈ گورننس ہے…! اور ہاں واقعہ بہار اسمبلی کے قریب کا ہے‘۔ 

Source: Twitter

وہیں کئی شراب مافیا کی جانب سے پولیس والوں کی پٹائی پر کئی میڈیا ہاؤسز نے بھی خبر پبلش کی تھی۔ دینِک بھاسکر کی رپورٹ کے مطابق،’ہفتے کو پٹنہ میں ریلوے لائن کے پاس شراب اسمگلرس اور پولیس کے مابین مڈبھیڑ کا ویڈیو اتوار کو سامنے آیا۔ اس میں ملزم ایک داروغہ کو پیٹتے ہوئے نظر آ رہے ہیں۔ ایک خاتون آتی ہے اور وہ بھی داروغہ کو پیٹنے لگتی ہے۔ اس کے بعد کچھ لوگ آکر داروغہ کو لے کر جاتے ہیں۔ پولیس اہلکار اپنی جان بچا کر بھاگتے دیکھے جا سکتے ہیں‘۔ 

Source: bhaskar

نتیجہ:

DFRAC کے فیکٹ چیک سے واضح ہے کہ وائرل ویڈیو حال فی الحال کا نہیں ہے بلکہ دو سال پرانا ہے۔ اس لیے بی جے پی کے رہنماؤں اور دیگر سوشل میڈیا یوزرس کا دعویٰ غلط ہے۔