Digital Forensic, Research and Analytics Center

بدھ, نومبر 30, 2022
spot_imgspot_imgspot_imgspot_img

Popular Posts

Latest

فیکٹ چیک: کیا کشمیر میں تین لاکھ کشمیری ہندوؤں کا قتل عام؟ اشوک پنڈت نے کیا فیک دعویٰ

گوا میں جاری انٹرنیشنل فلم فیسٹیول آف انڈیا (IFFI)...

فیکٹ چیک: ڈونلڈ ٹرمپ کے پوسٹ کا فیک اسکرین شاٹ وائرل

ڈونلڈ ٹرمپ کے پوسٹ کا ایک اسکرین شاٹ سوشل...

آن لائن اسکین الرٹ: قطر نہیں دے رہا 50GB فری ڈیٹا- پڑھیں فیکٹ چیک

سوشل میڈیا پر ایک پوسٹ شیئر کرکے دعویٰ کیا...

فیکٹ چیک: ’36 ٹکڑےکرنے‘ کا بیان دینے والا راشد خان نہیں، وکاس کمار ہے

شردھا واکر کو اس کے پارٹنر آفتاب پونہ والا...

فیکٹ چیک: سدرشن نیوز کے جرنلسٹ ساگر کمار کا مسلمانوں سے متعلق گمراہ کن دعویٰ

سینکڑوں مسلمانوں کا سڑک پر نماز ادا کرنے کا ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہو رہا ہے۔ یہ ویڈیو فرانس کے دارالحکومت پیرس کا بتایا جا رہا ہے۔اس ویڈیو کو سدرشن نیوز کے صحافی ساگر کمار نے اپنے آفیشل ٹویٹر اکاؤنٹ سے ٹویٹ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آنے والے دنوں میں ہندوستان کا یہی حال ہونے والا ہے۔ ساگر کمار نے لکھا، ’یہ پیرس میں جمعہ ہے دیکھو اور رووو۔ یہ کل کی بھارت کی تصویر ہے اگر تم نہیں جاگے تو‘۔ 

وہیں اجے سرکار نامی یوزر نے اسے فرقہ وارانہ رنگ دے کر اور مسلم خواتین پر قابل اعتراض تبصرہ کرتے ہوئے لکھا،’یہ فرانس کے دارالحکومت پیرس میں جمعہ کا منظر ہے۔ اگر بھارت میں آبادی پر قابو پانے کے قانون پر عمل درآمد نہ کیا گیا تو آنے والے وقت میں بھارت میں بھی یہی صورتحال ہوگی۔ گاؤں میں کہاوت ہے کشواہا کا کھیت، میائن کا پیٹ کبھی خالی نہیں ہوتا‘۔

کئی دیگر یوزرس بھی اس ویڈیو کو پیرس کا بتا کر شیئر کر رہے ہیں۔

فیکٹ چیک:

ساگر کمار کے دعوے کی جانچ-پڑتال کے لیے، DFRAC ٹیم نے پہلے InVID ٹول کی مدد سے ویڈیو کو ایک سے زیادہ کی-فریم میں تبدیل کیا۔ پھر ہر کی-فریم کو ریورس امیج سرچ کیا۔

اس دوران ٹیم کو ترکی کی ویب سائٹ yenisafak پر اسی طرح کا ایک ویڈیو ملا، جس میں بتایا گیا کہ روس کے دارالحکومت ماسکو میں مساجد میں نہ جا پانے والے ہزاروں مسلمانوں نے سڑکوں پر عید کی نماز ادا کی۔ اس دوران پولیس نے سڑکوں پر حفاظتی اقدامات کرنے کے ساتھ ساتھ مسلمانوں کو سڑکوں پر نماز ادا کرنے کی اجازت دی۔

علاوہ ازیں مزید تفتیش پر DFRAC ٹیم نے پایا کہ یہ ویڈیو ماسکو کی کیتھیڈرل مسجد کا ہے، جو روسی فیڈریشن اور یورپ کی سب سے بڑی اور بلند ترین مساجد میں سے ایک ہے۔

Source: Alamy

سدرشن نیوز اور اس کے صحافیوں کی جانب سے ماضی میں فرضی خبریں اور گمراہ کن اطلاعات پھیلائی جاتی رہی ہیں، جن کا DFRAC کی ٹیم نے فیکٹ چیک کیا ہے۔ جسے نیچے دیے گئے لنک پر کلک کر کے پڑھا جا سکتا ہے۔

1- فیکٹ چیک:مسلمانوں کے سناتن دھرم میں واپسی کے دعوے کے ساتھ وائرل تصویرنکلی جھوٹی

2- فیکٹ چیک:کانوڑیوں پر گوشت کا ٹکڑا پھینکنے پر ، سدرشن نیوز نے چلائی گمراہ کن خبر

فیکٹ چیک: کیا لوگوں نے لاؤڈ سپیکر پر اذان کا آپشن ڈھونڈ لیا ہے؟

فیکٹ چیک: سدرشن نیوز نے ایک بار پھر وائرل ویڈیو کے ذریعے فرقہ واریت پھیلانے کی کوشش کی

5- سدرشن نیوز کی اشتعال انگیز نشریات اور قابل اعتراض تقاریر کی ڈیٹا رپورٹ!

نتیجہ:

DFRAC کے فیکٹ چیک سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ وائرل ویڈیو کے ساتھ کیا گیا دعویٰ گمراہ کن ہے کیونکہ یہ ویڈیو پیرس کا نہیں بلکہ ماسکو کا ہے۔ نیز یہ ویڈیو جمعہ کی نماز کا نہیں بلکہ عید کا ہے۔