Digital Forensic, Research and Analytics Center

بدھ, نومبر 30, 2022
spot_imgspot_imgspot_imgspot_img

Popular Posts

Latest

فیکٹ چیک: کیا کشمیر میں تین لاکھ کشمیری ہندوؤں کا قتل عام؟ اشوک پنڈت نے کیا فیک دعویٰ

گوا میں جاری انٹرنیشنل فلم فیسٹیول آف انڈیا (IFFI)...

فیکٹ چیک: ڈونلڈ ٹرمپ کے پوسٹ کا فیک اسکرین شاٹ وائرل

ڈونلڈ ٹرمپ کے پوسٹ کا ایک اسکرین شاٹ سوشل...

آن لائن اسکین الرٹ: قطر نہیں دے رہا 50GB فری ڈیٹا- پڑھیں فیکٹ چیک

سوشل میڈیا پر ایک پوسٹ شیئر کرکے دعویٰ کیا...

فیکٹ چیک: ’36 ٹکڑےکرنے‘ کا بیان دینے والا راشد خان نہیں، وکاس کمار ہے

شردھا واکر کو اس کے پارٹنر آفتاب پونہ والا...

تیجسوی کو CM بننے کے لیے چاہیے محض دو اراکین اسمبلی ؟ اپوزیشن کے 4 اراکین اسمبلی استعفی دے کربنا سکتے ہیں تیجسوی کی حکومت؟ پڑھیں، فیکٹ چیک

بہار میں اقتدار کی تبدیلی کے بعد سے سوشل میڈیا پر طرح طرح کی گمراہ کن اور فرضی خبروں کا سیلاب آ گیا ہے۔ بہار حکومت سے متعلق سوشل میڈیا پر یوزرس  ہر دن،  نئے نئے دعوے کرتے رہتے ہیں۔ اسی طرح ،ایک دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ بہار میں تیجسوی یادو کو وزیر اعلیٰ بننے کے لیے محض  دو، اراکین اسمبلی کی ضرورت ہے۔ اگر اپوزیشن کے چار اراکین اسمبلی  استعفیٰ دے دیتے ہیں تو تیجسوی یادو وزیر اعلیٰ بن سکتے ہیں۔

پی این رائے نامی یوزر نے لکھا – “بہار میں “بڑا” کھیلا ۔ تیجسوی کو وزیراعلیٰ بننے کے لیے صرف دو،  اراکین اسمبلی کی حمایت کی ضرورت ہے۔ یا اپوزیشن کے 4 اراکین اسمبلی سے استعفیٰ دے دینے کی۔ یہ مشکل نہیں ہے۔پھر پلٹو چاچا سے پرانا حساب برابر۔

فیکٹ چیک:

وائرل دعوے کی حقیقت کو جاننے کے لیے، ہم نے پہلے اس پہلو پر تفحیص کی کہ کیا تیجسوی یادو کو وزیراعلیٰ بننے کے لیے واقعی صرف 2 ایم ایل اے کی حمایت کی ضرورت ہے؟ ہم نے گوگل پر کچھ کی- ورڈ  کو سرچ کیا۔ ہمیں ‘امر اُجالا’ کی  ایک رپورٹ ملی۔ اس رپورٹ کے مطابق آر جے ڈی بہار اسمبلی میں سب سے بڑی پارٹی ہے۔ آر جے ڈی کے پاس 79 اراکین ہیں۔ اس کے بعد بی جے پی کے 77 ایم ایل اے ہیں۔

امر اجالا

وہیں، جے ڈی یو کے پاس 45، کانگریس کے 19، بائیں بازو کے 16، ایچ اے ایم کے 4، اے آئی ایم آئی ایم کے 1 اور آزاد 1 ایم ایل اے ہیں۔ جیسا کہ آر جے ڈی، کانگریس اور بائیں بازو کی جماعتیں نتیش کمار سے پہلے عظیم اتحاد میں شامل تھیں، تو اسمبلی میں ان کی کل تعداد 114 ہو جاتی ہے۔ جبکہ اکثریت کا جادوئی ہندسہ 122 ہے، یعنی آر جے ڈی اتحاد کے پاس 8 ایم ایل اے کی کمی ہے۔

اگر ہم صرف آر جے ڈی کے اعداد و شمار کو دیکھیں تو اسے 122 کے  اعداد و شمار تک پہنچنے کے لیے 43 اراکین اسمبلی کی ضرورت ہوگی۔

نتیجہ:

ہمارے فیکٹ چیک سے یہ ثابت ہو رہاہے کہ تنہا آر جے ڈی کو اقتدار تک پہنچنے کے لیے 43 اراکین اسمبلی کی ضرورت ہوگی، جبکہ نتیش کمار کو چھوڑ کر مہاگٹھ بندھن کی پارٹیوں، آر جے ڈی، کانگریس اور بائیں بازو کو 8 اراکین اسمبلی کی ضرورت ہوگی، لہٰذا سوشل میڈیا یوزر  کی جانب سے کیا جا نے والا  دعویٰ غلط ہے۔

دعویٰ- تیجسوی یادو کو وزیراعلیٰ بننے کے لیے محض  2 ایم ایل اے کی حمایت کی ضرورت

دعویٰ کنندہ- پی این رائے

فیکٹ چیک- گمراہ کن