Digital Forensic, Research and Analytics Center

بدھ, نومبر 30, 2022
spot_imgspot_imgspot_imgspot_img

Popular Posts

Latest

فیکٹ چیک: کیا کشمیر میں تین لاکھ کشمیری ہندوؤں کا قتل عام؟ اشوک پنڈت نے کیا فیک دعویٰ

گوا میں جاری انٹرنیشنل فلم فیسٹیول آف انڈیا (IFFI)...

فیکٹ چیک: ڈونلڈ ٹرمپ کے پوسٹ کا فیک اسکرین شاٹ وائرل

ڈونلڈ ٹرمپ کے پوسٹ کا ایک اسکرین شاٹ سوشل...

آن لائن اسکین الرٹ: قطر نہیں دے رہا 50GB فری ڈیٹا- پڑھیں فیکٹ چیک

سوشل میڈیا پر ایک پوسٹ شیئر کرکے دعویٰ کیا...

فیکٹ چیک: ’36 ٹکڑےکرنے‘ کا بیان دینے والا راشد خان نہیں، وکاس کمار ہے

شردھا واکر کو اس کے پارٹنر آفتاب پونہ والا...

فیکٹ چیک: بھارتی فوج میں نیپالی فوجیوں کے بارے میں گمراہ کن دعویٰ، جانیں کیا ہے حقیقت؟

سویڈن کی اپسالا یونیورسٹی کے پروفیسر اشوک سوین نے بھارتی فوج میں نیپالیوں کی تعداد کی بابت بڑا دعویٰ کیا ہے۔ انہوں نے بھارتی فوج میں تعداد کے لحاظ سے گجراتیوں کا موازنہ نیپالیوں سے کیاہے۔

انہوں نے اپنے ٹویٹ میں لکھا کہ گجرات کی آبادی 70 ملین ہے لیکن وہ انڈین آرمی میں 22,000 ہیں؛ وہیں 3 کروڑ کی آبادی والے نیپال سے انڈین آرمی میں 35 ہزار ہیں۔

Source: Twitter

فیکٹ چیک:

وائرل دعوے کی جانچ-پڑتال کے دوران ڈی ایف آر اے سی کو ’دیش گجرات‘ کی ایک رپورٹ ملی، جس میں وزارت دفاع کے حوالے سے راجیہ سبھا میں دیے گئے جواب کی بنیاد پر بتایا گیا کہ بھارتی فوج میں اپنی خدمات انجام دینے کے معاملے میں گجرات ملک میں 16ویں نمبر پر ہے۔ 22417 گجراتی ہندوستانی فوج میں خدمات انجام دے رہے ہیں۔

وہیں ٹائمس آف انڈیا کی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ فی الحال 32,00 سے زائد نیپالی شہری سات گورکھا رائفل ریجیمنٹس (پہلی، تیسری، چوتھی، پانچویں،آٹھویں، نوویں اور گیارہویں) میں مختلف صلاحیتوں کے ساتھ ہندوستانی فوج میں خدمات انجام دے رہے ہیں، جن میں سے پانچ میں چھ بٹالین (ہر ایک میں تقریباً 800 فوجی)ہیں۔

1947 میں آزادی کے بعد دوسری، چھٹی، ساتویں اور دسویں ریجیمنٹ نے برطانوی فوج میں شمولیت اختیار کی۔ ان کو اب ایک ہی گورکھا ریجمنٹ میں اکٹھا کر دیا گیا ہے۔

نتیجہ:

لہذا انڈین آرمی میں نیپالی شہریوں کی تعداد کے بارے میں پروفیسر اشوک سوین کا دعویٰ گمراہ کن ہےکیونکہ انڈین آرمی میں ان کی تعداد 35000 نہیں بلکہ 3200 ہے۔